Jab Husn Tha Unka Jalwa Numa Anwar Ka Alam Kiya Hoga || جب حُسن تھا ان کا جلوہ نما انوار کا عالم کیا ہوگا

0
457
Jab-Husn-Tha-Unka-Jalwa-Numa
جب حُسن تھا ان کا جلوہ نما انوار کا عالم کیا ہوگا

جب حسن تھا ان کا جلوہ نما انوار کا عالم کیا ہوگا
ہر کوئی فدا ہے بن دیکھے تو دیدار کا عالم کیا ہوگا

قدموں میں جبیں کو رھنے دو چہرے کا تصور مشکل ھے
جب چاند سے بڑھ کر ایڑی ھے تو رخسار کا عالم کیا ھوگا

اک سمت علی اک سمت ُعمر صدیق ِادھر عثمان ُادھر
ان جگمگ جگمگ تاروں میں ماہتاب کا عالم کیا ہو گا

جس وقت تھے خدمت میں ان کی ُابو بکر و ُعمر ُعثمان و علی
اس وقت رسول اکرم کے دربار کا عالم کیا ہوگا

چاہیں تو اشاروں سے اپنے کایا ہی پلٹ دیں دنیا کی
یہ شان ہے ان کے ُغلاموں کی تو سرکار کا عالم ہو گا

کہتے ہیں عرب کے َذروں پر انوار کی بارش ہوتی ہے
اے نجم نہ جانے طیبہ کے ُگلزار کا عالم کیا ہوگا

جب حسن تھا ان کا جلوہ نما انوار کا عالم کیا ہوگا
ہر کوئی فدا ہے بن دیکھے تو دیدار کا عالم کیا ہوگا

نجم نعمانی

Jab Husn Tha Unka Jalwa Numa Anwar Ka Alam Kiya Hoga

Jab Husn Tha Unka Jalwa Numa Anwar Ka Alam Kiya Hoga
Her Koi Fida Hai Bin Dekhe to Deedar ka Alam Kiya Hoga

Qadmoon Me Jabeen ko Rakhne Doo Chehre ka Tasawar Mushkil Hai
Jab Chand se Barh Ker Ayrrhi Hai to Rukhsar ka Alam kiya Hoga

Ek Simt Ali Ek Simt Umar Siddique Idher Usman Udhar
Inn Jagmag Jagmag Taroon Me Mahtaab ka Alam Kiya Hoga

Jis Waqt Thay Khidmat Me Unki Abubakar-o-Umar-o-Usman-o-Ali
Uss Waqt Rasool Akram ke Darbar Ka Alam Kiya Hoga

Chaheen to Isharoon Se Apne Kaya he Palat Dein Duniya Ki
Ye Shaan Hai Unke Ghulamoon Ki to Sarkar ka Alam Kiya Hoga

Kehte Hain Arab ke Zaroon Per Anwar ki Barish Hoti Hai
Aye Najam Na JaneTayaba ke Gulzar ka Alam kiya Hoga

Jab Husn Tha Unka Jalwa Numa Anwar Ka Alam Kiya Hoga
Her Koi Fida Hai Bin Dekhe to Deedar ka Alam Kiya Hoga

Najam Nomani

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here